تازہ ترین

Post Top Ad

Friday, March 6, 2020

جمعیۃ علماء ہند کی طرف سے دہلی فساد میں غائب فرد سے متعلق دہلی ہائی کورٹ میں عرضی داخل ،نریلا مدرسہ کے مدرس حافظ ہارون کا اٹھارہ سالہ بیٹا محمد حذیفہ ۲۲؍فروری سے غائب ہے ۔عدالت نے دیال پور تھانہ سے کہا کہ ۱۱؍مارچ سے قبل اسٹیٹس رپورٹ داخل کرے۔

نئی دہلی(یواین اے نیوز6مارچ2020)دہلی فساد کے بعد اپنوں کی تلاش میں در در بھٹکنے والوں میں ایک نام حافظ محمد ہارون کا بھی ہے، جو نریلا کے ایک مدرسے میں استاذ ہیں اور فساد سے متاثرہ علاقہ مصطفی آباد کے رہنے والے ہیں ۔انھوں نے اپنے اٹھارہ سالہ بیٹے حافظ محمد حذیفہ کی تلاش میں ہسپتالوں سے لے کر پولس تھانے تک ہر جگہ چکر لگائی ہے ، لیکن سخت مایوسی ہاتھ لگی ہے ۔ مایوس والدین کو اس وقت تھوڑی سی تسلی ملی جب جمعیۃعلما ء ہند کے جنر ل سکریٹری مولانا محمود مدنی کی ہدایت پر جمعیۃ لیگل سیل نے اس سے متعلق دہلی ہائی کورٹ میں ایک عرضی دائر کی ہے ( writ of Habius Corpus )۔جسٹس سدھارتھ مریڈول او رجسٹس آئی ایس مہتا کی ڈویژن بنچ نے اس معاملے پر فوری شنوائی کرتے ہوئے دیال پور تھانہ کے ایس ایچ او ،تارکیشور سنگھ کو ہدایت دی ہے کہ مغموم والدین کا خیال کرتے ہوئے۱۱؍مارچ سے قبل عدالت میںاسٹیٹس رپورٹ داخل کرے۔ جمعیۃ علماء ہند کی طرف سے عدالت میں ایڈوکیٹ محمد نوراللہ اور ایڈوکیٹ حبیب الرحمن پیش ہوئے۔

واضح ہوکہ ۱۸؍سالہ حذیفہ دہلی فساد سے دو دن قبل ۲۲؍فروری سے ہی غائب ہے ، وہ آخری بار ٹیوشن پڑھنے کے لیے اپنے گھر مصطفی آبا د سے نکلاتھا اور والدہ کو یہ کہہ کر گیا تھا کہ وہ ٹیوشن کے بعد جامع مسجد میں نماز ادا کرے گا، لیکن اس دن سے اس کا کچھ پتہ نہیں ہے ۔ادھر دو دن بعد دہلی میں فساد بھڑک اٹھا ، ۳۵؍کلو میٹر دور نریلا میں رہنے والے حافظ ہارون کے لیے گھر آنا مشکل ہو گیا ۔ جب صور ت حال تھوڑی ٹھیک ہوئی تووہ جی ٹی بی ، ایل این جے پی اور رام منور لوہیا سمیت سبھی ہسپتال گئے ، ان کو مردہ خانے کی لاشیں دکھائی گئیں مگر کہیں ان کا نور نظر نظر نہیں آیا ۔
اپنے حالات سے ہتاش حافظ محمد ہارون نے جمعیۃ علماء ہند سے گہا رلگائی کہ ان کے لڑکے کی تلاش میں مد دکریں۔ جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے فوری طور سے اس معاملہ پر عدالت سے رجوع کا فیصلہ کیا، اس سلسلے میں جمعیۃ علماء ہند کے سکریٹری ایڈوکیٹ نیاز احمد فاروقی نے بتایا کہ جمعیۃ نے اعلان کیا ہے کہ اس فساد میں جو بھی شخص غائب ہے یا جس پر ناجائز مقدمہ تھوپا جارہا ہے یا جس پر ظلم ہوا ہے وہ جمعیۃ لیگل سیل سے رابطہ کرے: جمعیۃ نے اس کے لیے اپنی لیگل ٹیمیں تشکیل دی ہیں ، ساتھ ہی فساد زدہ علاقہ میں مولانا حکیم الدین قاسمی سکریٹری جمعیۃ علماء ہند سے رابطہ کیا جاسکتا ہے۔

No comments:

Post a Comment

Post Top Ad