تازہ ترین

Post Top Ad

Saturday, March 7, 2020

ای ڈی نے یس بینک کے بانی رانا کپور کو کیا گرفتار، ڈی ایچ ایف ایل کو دیا تھا 3000 کروڑ کا بونڈ لون!

ممبئی(یواین اے نیوز8مارچ2020)انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے یس بینک کے بانی رانا کپور کو گرفتار کرلیا ہے۔ اس سے قبل رانا کپور کو پوچھ گچھ کے لئے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ لے جایا گیا تھا۔ ای ڈی نے ممبئی میں رانا کپور کے گھر پر چھاپہ مارا۔ اس دوران یس بینک سے متعلق دستاویزات کی جانچ پڑتال کی گئی۔ ذرائع کے مطابق ، ای ڈی کی ابتدائی تحقیقات کے دوران پتہ چلا ہے کہ یس بینک نے ڈی ایچ ایف ایل کو تقریباً 3000 ہزار کروڑ کا برا قرض دیا تھا۔ رانا کپور اور ڈی ایچ ایف ایل کے مابین تعلقات کو جاننے کے لئے بھی کوششیں کی جارہی ہیں۔ یہ الزام ہے کہ رشوت کی رقم مبینہ طور پر کپور کی بیوی کے اکاؤنٹ میں قرض کے بدلے بھیجی گئی تھی۔ ایجنسی دیگر مبینہ بے ضابطگیوں کی بھی تحقیقات کر رہی ہے۔

آپ کو بتادیں کہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے ہفتہ کے روز یس بینک کے بانی رانا کپور سے لگاتار دوسرے دن پوچھ گچھ کی۔ یہ انکوائری منی لانڈرنگ سے متعلق ایک معاملے میں کی گئی تھی جس میں اس کے اور کچھ دوسرے شامل تھے۔ اس کے علاوہ دہلی اور ممبئی کے کچھ دیگر مقامات پر بھی چھاپے مارے گئے۔عہدیداروں نے بتایا کہ کپور کو ہفتے کی سہ پہر بالارڈ اسٹیٹ میں ایجنسی کے دفتر لایا گیا تھا۔ ای ڈی نے کپور سے متعلق منی لانڈرنگ ایکٹ (پی ایم ایل اے) کے تحت سات گھنٹے تک پوچھ گچھ کی ہے اور ان کا بیان ریکارڈ کیا ہے۔اس کے علاوہ ، مزید معلومات اور شواہد اکٹھا کرنے کے لئے ، ہفتہ کے روز دہلی اور ممبئی میں کپور کی تین بیٹیوں کے کیمپس میں بھی چھاپے مارے گئے۔

انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے جمعہ کی رات ورلی کے علاقے میں واقع 'سمندرا محل' کمپلیکس میں رانا کی رہائش گاہ کی تلاشی لی اور ان کی طرف سے سخت سوالات کے جوابات دیئے گئے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ کپور کے خلاف مقدمہ گھوٹالے سے متاثرہ ڈی ایچ ایف ایل سے متعلق ہے ، کیوں کہ بینک نے کمپنی کو دیا ہوا قرض نان پرفارمنگ اثاثوں (این پی اے) کے طور پر اعلان کیا گیا ہے۔

ڈی ایچ ایف ایل کی جانب سے ایک کمپنی کو 600 کروڑ روپے کا قرض بھی ای ڈی کی تفتیش کے تحت ہے۔ کپور کے خلاف پی ایم ایل اے کی دفعات کے تحت کارروائی کی گئی ہے۔ مرکزی تفتیشی ایجنسی کچھ کارپوریٹ اداروں کو دیئے گئے قرضوں اور مبینہ طور پر رشوت کے طور پر کپور کی اہلیہ کے کھاتے میں جمع کروانے والے کچھ فنڈز کے سلسلے میں رانا کے کردار کی بھی تحقیقات کر رہی ہے۔

No comments:

Post a Comment

Post Top Ad