تازہ ترین

Post Top Ad

بدھ، 20 مئی، 2020

اعظم گڑھ میں ایک بیٹے نے موبائل میں گیم کھیل کر گنوائے اپنے باپ کے آٹھ لاکھ روپے۔تفتیش میں جٹی پولس۔

اعظم گڑھ(یواین اے نیوز20مئی2020)بیٹے کے شوق نے والد کے آٹھ لاکھ روپے کی چپت لگوادی۔سائبر مجرموں نے معصوم کے موبائل گیمز کے شوق کو ایک ہتھیار بنادیا اورپہلے ضروری معلومات حاصل کیں اور پھر رقم لے اڑے۔ جب ہیکرز کی کرتوت بے نقاب ہوئی تو متاثرہ کی نیند اڑ گئی۔ سنسنی خیز کیس پولیس تک پہنچا اور تفتیش میں سارا کھیل بے نقاب ہوگیا۔ ٹیمیں مجرموں کی گرفتاری میں جٹ گئی ہیں،جن کے گرفتار ہونے کے بعد ہی پوری بات سے پردہ اٹھے گا۔

بلریا گنج علاقہ کے اسماعیل پور گوریا کا رہائشی ہریبنش لال سریواستو ایک استاد ہے۔ اس کا بارہ سالہ بیٹا دیپ رنجن چھٹی جماعت کا طالب علم ہے۔ اسے اپنے موبائل فون پر آن لائن گیمز جیسے پب جی ، کوڈا سافٹ ، فری فائر وغیرہ کھیلنا پسند ہے۔ ایس پی پروفیسر تروینی سنگھ نے بتایا کہ ایک دن ایک ہیکر نے دیپ رنجن کے موبائل فون پر واٹس ایپ پر میسج کیا۔جب بچے نے دلچسپی ظاہر کی تو دوستی کی گرہ اس کا مشغلہ بن گئی۔ پھر ، آہستہ آہستہ ، بچے کو پیشگی کھیل کھیلنے پر پیسہ  کا لالچ دیتے رہے بچے کی دل میں لالچ بڑھی تاکہ وہ بہت زیادہ رقم کما سکے۔

ہیکرز کی دھوکہ دہی میں مذکورہ لڑکے نے اپنے والد کے ڈیبٹ کارڈ کی تفصیلات کے ساتھ ساتھ موبائل فون نمبر بھی شیئر کیا۔ ہیکرز چند روپے پی ٹی ایم اکاؤنٹ پر بھیجتا ہے ، جس کے بعد انہوں نے لڑکے کے والد کے موبائل فون پر او ٹی پی کے آنے کی بھی معلومات حاصل کیں۔ ساری معلومات حاصل کرنے کے بعد سائبر مجرموں نے 10 اپریل سے 12 مئی کے درمیان اس کے والد کے بینک اکاؤنٹ سے آٹھ لاکھ روپے اڑا دیئے۔ ایس پی نے بتایا کہ پیسہ اڑانے والے مجرم کا سراغ لگا لیا گیا ہے انہیں جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad