تازہ ترین

Post Top Ad

پیر، 4 مئی، 2020

جن عربوں کو برا بھلا کہہ رہے تھے سنگھی، آج اسی عرب ممالک نے بھیج دی 7 میٹرک ٹن طبی سامان۔

متحدہ عرب امارات (یواین اے نیوز4مئی2020)کوویڈ 19 کے وبا کا مقابلہ کر رہے بھارت کو یواے ای ، نے ہفتے کے روز سات میٹرک ٹن طبی سامان بھیج کر بھاری مدد کی ہے۔ نئی دہلی میں متحدہ عرب امارات کے سفارتخانے نے ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ طیارے کے ذریعے بھیجا گیا مواد تقریبا سات ہزار طبی عملے کے لئے مددگار ثابت ہوگا۔

ہندوستان میں متحدہ عرب امارات کے سفیر احمد عبد الرحمن البناء نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کوویڈ 19 کی وبا کا سامنا کرنے والے ممالک کی مدد کے لئے پرعزم ہے۔ متحدہ عرب امارات کی جانب سے ہندوستان کو دی جانے والی امداد دونوں ممالک کے درمیان کئی سالوں کے گہرے اور دوستانہ تعلقات کی عکاس ہے۔پوری دنیا کوویڈ ۔19 سے لڑ رہی ہے اور متحدہ عرب امارات اس دور میں دوسرے ممالک کی مدد کے لئے پرعزم ہے۔

انہوں نے کہا ، "کوویڈ ۔19 کا پھیلاؤ عالمی سطح پر تشویش کا باعث بن گیا ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ وائرس کو روکنے کے لئے دوسرے ممالک کی کوششوں کو مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔" آج تک متحدہ عرب امارات نے 34 سے زائد ممالک کو 348 میٹرک ٹن سے زیادہ امداد فراہم کی ہے۔اس عمل کے تحت قریب 348،000 طبی پیشہ ور افراد کی مدد کی گئی ہے۔

اسی کے ساتھ ہی ، بھارت نے کورونا بحران سے نبرد آزما 55 ممالک کو ملیریا کی دوا ہائیڈرو آکسیروکلورین بھیجی ہے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ کئی ممالک کو دوائیں فروخت کی جارہی ہیں ، جبکہ کچھ ممالک کو اس وبا سے لڑنے میں مدد کے لئے دوائیں بھیجی گئی ہیں۔ اس گولی کو پہلے ہی امریکہ ، ماریشس اور سیچلس جیسے کچھ ممالک میں بھیجا جا چکا ہے۔

ہندوستان نے یہ دوائی اپنے پڑوسی ممالک افغانستان ، بھوٹان ، بنگلہ دیش ، نیپال ، مالدیپ ، ماریشس ، سری لنکا اور میانمار کو بھیجی ہے۔ ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ پاکستان نے بھی ہائیڈرو آکسیروکلون کا مطالبہ کیا ہے یا نہیں؟ اسی کے ساتھ ہی،ہندوستان کی میڈیکل ٹیم بھی بہت سے پڑوسی ممالک جانے کی تیاری کر رہی ہے۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad