تازہ ترین

Post Top Ad

بدھ، 17 جون، 2020

20 بھارتی فوجی شہید ، 15 لاپتہ ، چین وقفے وقفے سے بھارتی فوجیوں کی لاشیں بھیج رہا ہے ،چین کے بھی 43 فوجی کے زخمی ہونے کی خبر!

نئی دہلی(یواین اے نیوز17جون2020)چین نے 45 سال بعد ہندوستان کے ساتھ دھوکہ دیا ہے۔ پیر کی رات چینی فوج نے ہندوستانی فوج پر حملہ کیا ، جو لداخ کی وادی گالان میں مذاکرات کے لئے گئے تھے۔ ایک گولی بھی نہیں چلائی گئی ، لیکن چینی فوجیوں نے پتھراؤ ، لاٹھی اور تیز دھار چیزوں سے حملہ کیا۔ اس میں ہندوستان کے کمانڈنگ آفیسر سمیت 20 فوجی مارے گئے۔یہ جھڑپ جو تین گھنٹے تک جاری رہی لداخ میں 14 ہزار فٹ اونچی گالان میں دنیا کی دو جوہری قوتوں کے مابین ہوئی۔ اسی گیلان وادی میں ، جہاں 1962 کی جنگ میں 33 ہندوستانی ہلاک ہوئے تھے۔ بھارت نے چین کی طرف مذاکرات میں مداخلت کی ہے۔ اس کے مطابق چین سے 43 فوجی ہلاکتوں کی اطلاع ہےلیکن چین نے یہ قبول نہیں کیا ہے۔

آپ کو بتادیں کہ اسی طرح 20 اکتوبر 1975 کو اروناچل پردیش کے تلنگ لا میں چین نے آسام رائفل پیٹرولنگ پارٹی پر دھاوا بول کر حملہ کیا۔ اس میں چار ہندوستانی فوجی شہید ہوئے۔اسکے 45 سال بعدچین کے بارڈر پر ہمارے فوجی شہید ہوگئے ہیں۔چین وقفے وقفے سے فوجیوں کی لاشیں بھیج رہا تھا ، کچھ فوجی دریا میں گر پڑے ہیں۔فوج کے ذرائع نے بتایا کہ 15 سے 20 فوجی لاپتہ ہیں۔ ان میں سے کچھ چینی قبضے میں ہیں۔ چین وقفے وقفے سے بھارتی فوجیوں کی لاشیں بھیج رہا ہے۔ کچھ فوجی دریا میں گر چکے ہیں ، جن کی لاشیں مل رہی ہیں۔ 36 گھنٹے ہونے کوآئے ہیں،لیکن ان کا پتہ نہیں چل سکا ہےکنٹرول لائن پر چین کی نقل و حرکت میں اضافہ ہوا ہے۔ وہ اپنی فوج کے جانی نقصان پر ہوائی جہاز اٹھا رہا ہے۔

آرمی کا کہنا تھا- 17 فوجی زخمی ہوئے
آرمی نے کہا - 15۔16 جون کی درمیانی شب کو جہاں ہندوستان اور چین کے فوجیوں کے مابین ایک جھڑپ ہوئی تھی ، دونوں افواج اب پیچھے ہو گئی ہیں۔ لائن آف ڈیوٹی کے دوران 17 ہندوستانی فوجی شدید زخمی ہوگئے۔ وہ ان علاقوں میں تھے جن کی اونچائی صفر سے کم درجہ حرارت پر تھی۔ اسی وجہ سے ، وہ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ شہداء فوجیوں کی کل تعداد 20 ہوگئی ہے۔شہید ہونے والوں میں 16 بہار رجمنٹ کے کمانڈنگ آفیسر کرنل سنتوش بابو بھی شامل ہیں۔ دو دیگر ناموں کی تصدیق ہوگئی ہے۔ یہ حولدار پالانی اور سپاہی کندن جھا ہیں۔ باقی نام ابھی تک سامنے نہیں آئے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad