تازہ ترین

Post Top Ad

بدھ، 12 اگست، 2020

علی گڑھ میں تھانہ کے اندر بی جے پی ایم ایل اے کی جمکر کٹائی

علی گڑھ۔'یو این اے نیوز 12اگست 2020) علی گڑھ میں ، بی جے پی کے ایم ایل اے اور تھانیدار کے بیچ جمکر مار پیٹ ہوگئی  بی جے پی کے ایم ایل اے راجکمار سہیوگی نے الزام لگایا کہ گونڈا تھانے میں ایس او سمیت تین داروغہ نے مجھ پر حملہ کردیا اور کپڑے بھی پھاڑے  دیۓ،وہیں   ایس او کا کہنا ہے کہ ایم ایل اے نے سب سے پہلے ہاتھ اٹھایا تھا۔  اس واقعے کے بعد تھانہ کے باہر ایم ایل اے کے حامیوں کا ایک بہت بڑا ہجوم جمع ہوگیا ہے۔  خراب ماحول کے باعث علاقے میں آدھی دکانیں بند کردی گئیں ہیں۔  بڑے افسران سمیت  دیگر ایم ایل اے بھی موقع پر پہنچ گئے ہیں۔

 بتایا جارہا ہے کہ بی جے پی کے ایم ایل اے راجکمار پارٹی کارکن کے ساتھ دو چار روز قبل ہوئے جھگڑے کے بارے میں بات چیت کرنے تھانے پہنچے تھے۔  اس دوران دونوں فریق آپس میں بھڑ گئے۔  ایم ایل اے نے پولیس پر الزام لگایا کہ وہ پیسہ لیکر کارکن کے معاملے میں کارروائی نہیں کررہے ہیں۔  وہیں  ایم ایل اے اور پولیس کا آپس میں بھڑ جانے کی خبر   حاصل کرنے کے بعد ، محکمہ پولیس میں خوف و ہراس کا ماحول پیدا ہوگیا ہے  ایم ایل اے کے حامی اور بی جے پی کارکن بڑی تعداد میں تھانے پہنچ گئے ہیں اور احتجاج کر رہے ہیں۔

واضح رہے اس معاملے کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایم اور ایس ایس پی گونڈا پولیس اسٹیشن پہنچ گئے۔  دونوں فریقین کے مابین بات چیت کرکے معاملہ کو رفع دفع کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔  ادھر ، ایک خبر ہے کہ ایم ایل اے نے لکھنؤ کے ہائی کمان  کو سارا معاملہ بتا دیا ہے۔  اس کے بعد ، انتظامیہ کی ٹیم متحرک ہوگئی ہے اور معاملے کو پرسکون کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔  حکمران جماعت اور حکومت کے عہدیدار لمحہ بہ لمحہ معلومات لے رہے ہیں۔

 اس سارے واقعے پر ، گونڈا پولیس اسٹیشن میں موجود چوکیدار بتن لال نے بتایا کہ تھانہ میں آتے ہی بی جے پی کے ایم ایل اے   راجکمار سہیوگی نے ان کے ساتھ بدسلوکی (گالی گلوج )شروع کردی۔  اس دوران اس نے ایس او انوج سائیں کے گال پر تھپڑ مارا۔  اس کے بعد دونوں کے بیچ جمکر مار پیٹ ہوگئی

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad