تازہ ترین

Post Top Ad

بدھ، 5 اگست، 2020

جامع مسجد سیتامڑھی پر بھگوا جھنڈا لگایاگیا، مسلمانوں میں زبردست غم وغصہ

سیتامڑھی/محمد ارمان علی (یواین اے نیوز 5اگست2020)سیتامڑھی شہر کے کوٹ بازار میں واقع ضلع کی مشہور و معروف جامع مسجد ومدرسہ اسلامیہ عربیہ کے مین گیٹ سمیت چارو طرف اکثریتی فرقہ کے سرپسند عناصر کے ذریعہ بھگوا جھنڈا لگاگرایکبار پھر شہر میں فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرنے کی ناپاک کوشش کی گئ ہے ، جس سے ضلع بھر کے مسلمانوں میں زبردست غم وغصہ ہے، اس کی اطلاع ایس پی انیل کمار کو دی گئ جس کے بعد ڈی ایس پی صدر، انپسکٹر نگر تھانہ سمیت درجنوں پولس کے جوان جائے وقوع پر پہونچ کر جامع مسجد کے مین گیٹ ومدرسہ اسلامیہ عربیہ کے چہار جانب عمارت پر سے بھگوا جھنڈا اتارا گیا ،واضع ہوکہ جہاں پہ جامع مسجد واقع ہے

وہاں کوئ مسلم آبادی نہیں ہے ،جس کی وجہ سے اکثریتی طبقہ کے شرپسند عناصر اکثر وبیشر جامع مسجد کےخلاف شرپسندانہ اقدامات کرتے رہتے ہیں نزدیک صرف ایک ہی مسلم کا گھر ہے اس کے گھر پر بھی بھگوا جھنڈا لگایا گیا ہے 1992میں درگا پوجا کے موقع پر اس جامع مسجد ومدرسہ کو جلایاولوٹا گیا تھا جامع مسجد ومدرسہ اسلامیہ عربیہ کے سکریٹری محمد اعظم حسین انور جمعیت علماء سیتامڑھی کے صدر مولانا محمد صدرعالم نعمانی ومدرسہ رحمانیہ مہسول کے صدر محمد ارمان علی نے ایس پی انیل کمار سے مطالبہ کیا ہے کہ جامع مسجد پر بھگوا جھنڈا لگانے والوں کی پہچان کراسکو گرفتار کیا جائے اور جامع مسجد کی حفاظت کیلئے پولس تعنیات کی جائے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad